اسلامی معلومات

جدید تحقیق کے مطابق : اجوا ء کھجور کینسر سے محفوظ رکھتی ہے

This post is also available in: English

کینسر  ایک  جان  لیوا  بیماری   ہے جو  پوری  دنیا  میں پائی جاتی ھے۔  یہ ایک پیچیدہ بیماری کی حیثیت رکھتی ہے کیونکہ اس کی مختلف صورتوں کا علاج انتہای مشکل ہے۔ اس کی مختلف صورتیں انسانی جسم پرمھلک طور پر اثرانداز ہوتی ہیں۔ ابتدائی مراحل میں اس بیماری کی تشخیص کرنا مشکل ہوتا ہے اور اکثر مریضوں کی تشخیص دیر سے ہونے کی وجہ سے ادویات کا اثر نہیں ہو پاتا ساتھ ہی ساتھ بیماری سے لڑنے کی سکت مریض کھوتا جاتا ہے۔ اس بات کو بھی مدنظر رکھا جائے کہ مریض کا پورا خاندان اس بیماری سے جوج رہا ہوتا ہے اس کے لیے وہ بھاری قیمت ادا کر رہے ہوتے ہیں تا کہ ان کا پیارا لمبی زندگی گزار سکے۔

ڈاکٹرز  ہمیشہ اس بیماری سے بچاؤ کی تدبیر کرتے ہیں ، اس کے لیے وہ صحت مند اصولوں پر مبنی زندگی گزارنے پر اصرار کرتے  تا کہ اس خطرناک بیماری سے بچا جا سکے کیو نکہ احتیاط علاج سے بہتر ہے۔ تاہم، کینسر دنیا بھر کے سائنسدانوں کا اہم موضوع بحث ہے اور وہ اس کے کامیاب، محفوظ اور کم قیمت علاج کی ایجاد کے لیے کوشاں ہیں۔

حال ہی میں ، ایک تحقیق کے نتیجے میں بتایا گیا ہے کہ اجواء کھجور میں ایسی خصوصیات پائی جاتی ہیں  جو اس خطرناک بیماری  سے بچا سکتی ہیں۔ نیچے  دیے گئے آرٹیکل میں ان خصوصیات سے متعارف کروایا جا ئے گا۔



اجواء کھجور  کینسر کو روکتی ہے

 دنیا بھر میں مدینہ کی اجواء کھجورسب سے مہنگی ، مزیدار  اور نرم ہونے کی وجہ سے مشہور ہیں۔ حضرت محمد ﷺ نے  بذات خود  اجواء کھجور کو روزمرہ  کی زندگی میں شامل کرنے  کی تلقین کی ہے اور اس کے فوائد میں بتایا ہے کہ یہ بہت سی بیماریوں کا علاج ہے۔ تاہم ، حال ہی میں ریسرچ سے ثابت  ہوا ہےکہ مدینہ کی اجواء کھجور میں ایسے اجزاء پائے جاتے ہیں جو کینسر کے جرثوموں کی روک تھام کے لئے معاون ثابت ہوئے ہیں۔

یہ تحقیق کس نے کی؟  

اجوا ء کھجورسے متعلق کی گئی اس  ریسرچ  میں اس کھجور میں موجود منرلز کی اہمیت کو بتایا گیا ہے، اس ریسرچ کو اشتراکی طور پر کنگ سعود یونیورسٹی   اور نیچرلز لیبارٹری،مشی گن یونیورسٹی میں کیا گیا ہے۔



اجواء کھجوروں پر کی گئی ریسرچ  ان نتائج پر مبنی ہیں

The results of the research carried on Ajwa dates gave the following findings.

  • اجواء کھجور میں اینٹی۔سوزش خصوصیات ہیں۔جس طرح بازار سے ملنے والی ادویات میں ہوتا ہے۔اجواء کھجور میں بیماری کو روکنے کی وہ تمام  خصوصیات ہیں جو  اینٹی ۔ٓاکسیڈنٹ دوا میں موجود ہوتے ہیں۔

ساءنسی تیحقیق کےزیراثر کیےگیےمشاہدات کی روشنی میں ماہر صحت کا کہنا ہے کہ

اجواء کھجور میں فلیوونایڈ وافر مقدار میں پایا جاتا ہے جو کہ اینٹی ٓاکسیڈینٹ ہوتا ہے۔

  • جو لوگ  ذیا بیطس کا شکار ہیں ان کے لیے اجواء کھجور کی میٹھاس نقصان دہ نہیں ہوتی کیونکہ اس میں  مونوسایکرایڈ شوگر ہوتی ہے۔
  • اس میں سایکلوٓاکسیجینیز پایا جاتا ہےجو اینٹی ۔انفلامینٹری  ڈرگز کی حیثیت رکھتے ہیں۔ جیسے کہ ایسپرن، سلیبکس وغیرہ۲۰۳۰سعودی ویژن میں تحقیق کا نیشنل پلان



وغیرہ۲۰۳۰سعودی ویژن میں تحقیق کا نیشنل پلان

یہ تحقیق سعودی ویژن ۲۰۳۰ کےمنصوبوں میں سے ایک حصہ ہے۔ اس منصوبے کے پیش نظر  کنگ سعود  یونیورسٹی  نے اپنا ایک اہم کردارادا کیا ہے جو کہ ملک کی ترقی و خوشحالی کا باعث بن سکتی ہے۔ اس کے لیے انھوں نے ایسی پا لیسی کا انتخاب کیا ہے جس کے ذریعے سائنٹفک ریسرچ کا ایک وسیع میدان کھل سکتا ہے۔ صالح السعود ، اشتراکی ریسرچ کے سپروائزر کا کہنا ہے کہ

یہ ریسرچ  ان تمام  مطالعوں  اور موضوعات میں سے ایک واحد مطالعہ ہے جو سعودی عربیہ میں پائی جانے والی مختلف کھجوروں کا مطالعہ کرتی ہے۔ یہ ریسرچ  کنگ سعود یونیورسٹی اور کنگ عبدلعزیز سٹی ٓاف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی طرف سے حمایت کے نتیجے میں کی گئی ہے”

کےایس یو کے مطابق یہ ریسرچ امریکہ سے شائع ہونے والےرسالہ برائے اگریکلچر اینڈ فوڈ اکسٹھویں رسالےمیں شائع  ہوئی تھی۔ حضرت محمد ﷺ نے آج سے چودہ سو سال پہلے اجواء  کے  فواءد ظاہر کر دئے جبکہ سائنس آج اتنے سالوں کی مشاہدات کے بعد بتا رہی ہے۔  یہ بہت زیادہ اہم  ہے کہ کھجوروں کو اپنی زندگی میں شامل کیا جائے  تا کہ کینسر جیسی بیماری سے بچا جا سکے۔

اللہ ہم سب کو مہلک اور خطرناک بیماریوں سے محفوظ رکھے۔ اس علم کو اپنے پیاروں سے بھی بانٹیں۔

Latest Updates: You are most welcome to join our Whatsapp Group / Facebook Page to get the recent updates, news, and events of Saudi Arabia.

Comment here