تازہ ترین خبریں

سعودی عرب کا متعدد پیشہ ور افراد کوشہریت دینے کااعلان

This post is also available in: English

سعودی عرب کسی کو بھی شہریت نہ دینے کے حوالے سےجانا جاتا ہے۔ جہاں تمام ممالک اپنی قومیت اور ان سے وابستہ مراعات جیسے گرین کارڈ یا ریڈ کارڈ کی وجہ سے پوری دنیا کے لوگوں کو راغب کرتے ہیں۔ سعودی عرب ایک سخت قانون کو برقرار رکھنے کے حوالے سے جانا جاتا ہے یہاں تک کہ لوگ ریاست میں کئی دہائیاں گزاردیتےہیں۔ لیکن سعودی ویژن 2030 کے نفاذ کے ساتھ ہی مملکت میں حالات تبدیل ہورہےہیں۔

 

ویزا سے لے کر صنفی امتیاز تک کے مختلف قوانین میں نرمی کےباعث اب یہ اعلان کیا جاتا ہے کہ شہریت حاصل کرنے کے پرانے قانون کو اب تبدیل کیا جائے گا۔ یہ اعلان کیا ہے؟ کیا سب کو قومیت دی جائے گی؟ قومیت سے فائدہ اٹھانے کا طریقہ کار کیا ہے؟ ذیل میں مضمون میں حالیہ پیشرفت کے بارے میں تمام تفصیلات جانیں۔

قومیت میں نرمی کا شاہی فرمان

سعودی نیوز پورٹل کے مطابق ، سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبد العزیز نے غیر ملکی پیشہ ور افراد کو سعودی شہریت دینے کا ایک حکم نامہ جاری کیا تاکہ دنیا بھر سے روشن ذہنوں کو مملکت کی طرف راغب کیا جاسکے کیونکہ وہ اپنی معیشت کو مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔



سعودی شہریت کس کو دی جائے گی؟

دو ماہ قبل جاری ہونے والے شاہی فرمان کے مطابق ، سعودی شہریت ذہین غیر ملکی پیشہ ور افراد کو مختلف شعبوں میں دی جائے گی، جیسے

  • اسلامی اسکالرز۔.
  • جوہری اور قابل تجدید توانائی کے ماہرین۔
  • دوائی۔.
  • دواسازی.
  • کمپیوٹر سائنس.
  • تیل.
  • مصنوعی ذہانت۔
  • روبوٹکس
  • ماحولیات
  • خلابازی
  • ہوا بازیثقافت۔
  • کھیل
  • آرٹس

سبق کی اطلاعات کے مطابق

اس میں سعودی عرب کو جغرافیائی نوعیت کی وجہ سے درکار ڈومینز کا احاطہ بھی  کیا جائے گا جیسے ڈیسی لینیشن ٹیکنالوجی میں ممتاز سائنسدان جو ترقی میں تیزی لانے کے مقاصد کے حصول میں مدد فراہم کریںگے۔



پیشہ ور افراد کو قومیت دینے کی کیا ضرورت ہے؟

سعودی وژن 2030 کے مطابق ، سنہ 2016 میں ایک پرجوش اسکیم شروع کی گئی تھی جس کا مقصد تیل پر منحصر سعودی معیشت کو متنوع بنانا اور قومی ترقی کو ملک اور شہریوں کے فائدے میں فروغ دینا تھا۔جس کے باعث دنیا بھر سے تخلیقی افراد سعودی عرب میں آنیں ، رہیں اور کام کریں۔

قومیت کے فرمان پر کب عمل ہوگا؟

حکم نامے پر کب عمل ہوگا اس بارے میں کوئی خبر نہیں ہے۔ کوئی طریقہ کار ، وقت کی حد ، معیار کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ مزید یہ کہ ابھی تک یہ بھی واضح نہیں کہ اس سلسلے میں غیر مسلم پیشہ ور افراد بھی شامل ہونگےکہ نہیں۔

Latest Updates: You are most welcome to join our Whatsapp Group / Facebook Page to get the recent updates, news, and events of Saudi Arabia.

Source: Gulf News

Comment here